حکومتی پالیسیوں سے لگتا ہے تاجروں سے ٹیکس نہیں تاوان وصول کیا جارہا ہے۔ رانا محمد سکندراعظم خاں

فیصل آباد(حشمت خان ) فیصل آباد چیمبر آف کامرس کے سابق سنیئر نائب صدر رانا محمد سکندراعظم خاں نے کہا ہے کہ ملک بھر میں بجٹ میں کیے گئے ظالمانہ اقدامات سے صنعتوں کی بندش اور احتجاجی کا سلسلہ ملکی معیشت کیلئے انتہائی نقصان دہ ہے فیصل آباد،گوجرانوالہ سمیت ملک میں انڈسٹریز کی ہڑتال اور لاہور میں تاجر بچاؤ کنونشن حکومتی ٹیکس نظام کی وصولی اور طریق کار پر عدم اعتماد ہے۔صنعتی شعبہ اور تاجر برادری ایمانداری سے اپنے حصہ کا ٹیکس ادا کررہی ہیں اس لیے ٹیکس نظام پر تاجر تنظیموں سے مشاورت کی جائے اور کاروبار میں آسانیاں پیدا کی جائیں تاکہ صنعتکار و تاجر برادری اپنے حصہ کا ٹیکس ادا کرکے حکومتی ریونیو میں اضافہ اور ملکی معیشت کو مضبوط کرسکے۔انہوں نے کہا کہ بجٹ میں کیے گئے اقدامات سے ایسا محسوس ہورہا ہے کہ تاجروں سے ٹیکس نہیں تاوان وصول کیا جارہا ہے ٹیکس وصولی کے طریق کار اور شرائط سے کاروباری سرگرمیوں میں رکاوٹیں پیدا کی جارہی ہیں۔انہوں نے کہا کہ بجٹ میں 17فیصد سیلز ٹیکس اور دیگر نئے ٹیکسوں کے نفاذ پر پورے ملک کی بزنس کمیونٹی سراپا احتجاج ہے اور مارکیٹوں میں سناٹا چھایا ہوا ہے اور کاروباری سرگرمیاں مانند پڑنے سے صنعتکاروں اور تاجروں کو نقصانات کا سامنا کاروباری ادارے بند اور لاکھوں مزدور بے روزگاری کا شکار ہیں۔انہوں نے کہا کہ صنعتکار تاجر دوست پالیسیاں اپنا کر رہی ملکی معیشت کو مستحکم کیا جاسکتا ہے دھونس دباؤ،سختی سے کاروباری سرگرمیاں متاثر اور حکومتی ریونیو میں کمی ہوگی۔

About The Author

CTN

You might be interested in

LEAVE YOUR COMMENT

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Online Shopping in BangladeshCheap Hotels in Bangladesh